امریکہ کو پاکستان میں فوجی اڈے دینے کی خبروں پر دفتر خارجہ کی وضاحت جاری

امریکہ کو پاکستان میں فوجی اڈے دینے کی خبروں پر دفتر خارجہ کی وضاحت جاری

دفتر خارجہ کے ترجمان نے کہا ہے کہ پاکستان کا کسی ملک یا حکومت کو اڈے فراہم کرنے کا کوئی ارادہ نہیں ہے۔ پاکستان اپنی سرزمین یا فضائی حدود کسی دوسرے ملک کے خلاف استعمال نہیں ہونے دے گا۔ پاکستان کی جانب سے امریکہ کو اڈے دینے کی قیاس آرائیاں غلط ہیں۔

ترجمان ممتاز زہرہ بلوچ نے قومی اسمبلی میں عمر ایوب کے اس بیان کی تردید کی جس میں انہوں نے دعویٰ کیا کہ موجودہ یا نگراں حکومت نے امریکہ میں دو فوجی اڈے کھولے ہیں۔ جنگی بریفنگ کے دوران اپوزیشن لیڈر نے ایوب کے بیان کی تردید کی اور حکومت سے ایئربیسز کے حوالے سے وضاحت طلب کی۔ انہوں نے کہا کہ یہ تشویشناک بات ہے اور حکومت کو واضح کرنا چاہیے کہ امریکا کو اڈے دینے کا فیصلہ کس نے کیا۔ لیکن ترجمان نے کہا ہے کہ پاکستان کی جانب سے امریکہ کو اڈے دینے کی قیاس آرائیوں میں کوئی صداقت نہیں ہے۔

ہم اپنی آئینی حدود بخوبی جانتے ہیں،آرمی چیف

اساتذہ نے طلبا کے لیے کلاس کو سوئمنگ پول میں بدل دیا، ویڈیو وائرل

اپنا تبصرہ لکھیں