حکومت کی دہشت گردی کیخلاف آپریشن عزم استحکام شروع کرنے کا فیصلہ

حکومت کی دہشت گردی کیخلاف آپریشن عزم استحکام شروع کرنے کا فیصلہ

پاکستان بھر سے انتہا پسندی اور دہشتگردی کے خاتمے کے لیے آپریشن عزم استحکام کی منظوری دیدی.وزیراعظم کی زیر صدارت نیشنل ایکشن پلان پر مرکزی ایپکس کمیٹی کے اجلاس کا اعلامیہ جاری کردیا گیا۔اجلاس میں، سروسز چیفس، تمام چاروں صوبوں اور گلگت بلتستان کے وزرائے اعلیٰ .اور تمام صوبوں کے چیف سیکرٹریز کے علاوہ دیگر سینئر سویلین، فوجی اور قانون نافذ کرنے والے اداروں کے افسران نے شرکت کی۔

اجلاس میں فورم نے انسداد دہشت گردی کی جاری مہم اور داخلی سلامتی صورت حال کا ایک جامع جائزہ لی جب کہ نیشنل ایکشن پلان کے ملٹی ڈومین اصولوں پر ہونے والی پیش رفت پر بھی غور کیا۔اجلاس نے مکمل قومی اتفاق رائے اور نظام کے وسیع ہم آہنگی پر قائم ہونے والی انسداد دہشت گردی کی ایک جامع اور نئی جاندار حکمت عملی کی ضرورت پر زور دیا۔اجلاس میں خاص طور پر کچھ اقدامات میں عمل درآمد نہ ہونے کی خامیوں کی نشاندہی کرنے پر زور دیا گیا اور اس عزم کا اعادہ کیا گیا کہ خامیوں کو اولین ترجیح میں دور کیا جا سکے۔وزیراعظم نے قومی عزم کی علامت، صوبوں، گلگت بلتستان اور آزاد جموں و کشمیر سمیت تمام اسٹیک ہولڈرز کے اتفاق رائے سے آپریشن ’’عزم-استحکام‘‘ کے آغاز کے ذریعے انسداد دہشت گردی کی قومی مہم کو دوبارہ متحرک کرنے کی منظوری دیدی.

اپنا تبصرہ لکھیں